حضور ایسا کوئی انتظام ہو جائے ۔ سید صبیح الدین صبیح رحمانی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Naat kainaat syed sabihudin rehmani.jpg

شاعر: سید صبیح الدین صبیح رحمانی

وڈیو : Huzoor aisa koi intezam ho jaaye

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

حضور ایسا کوئی انتظام ہو جائے

سلام کیلئے حاضر غلام ہو جائے


میں صرف دیکھ لوں اک بار صبح طیبہ کو

بلا سے پھر مری دنیا میں شام ہو جائے


تجلیات سے بھر لوں میں کاسئہ دل و جاں

کبھی جو ان کی گلی میں قیام ہو جائے


حضور آپ جو سن لیں تو بات بن جائے

حضور آپ جو کہہ دیں تو کام ہو جائے


حضور آپ جو چاہیں تو کچھ نہیں مشکل

سمٹ کے فاصلہ یہ چند گام ہو جائے


ملے مجھے بھی زبان ِ بو صیری و جامی

مرا کلام بھی مقبول عام ہو جائے


مزہ تو جب ہے فرشتے یہ قبر میں کہہ دیں

صبیح! مدحت خیر الانام ہو جائے

}
"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

مزید دیکھیں =[ترمیم]

اعظم چشی | محمد علی ظہوری | عبدالستار نیازی | صبیح رحمانی | مظفر وارثی | احمد علی حاکم


گذشتہ ماہ زیادہ پڑھے جانے والے موضوعات
نئے اضافہ شدہ کلام
زیادہ پڑھے جانے والے کلام