"میں فنا اندر فنا ہوں تو بقا اندر بقا ۔ عبد العزیز خالد" کے اعادوں کے درمیان فرق

"نعت کائنات" سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش
(نیا صفحہ: link=عبد العزیز خالد {{بسم اللہ }} شاعر: عبد العزیز خالد ==={{نعت}}=== میں فنا اند...)
 
(No difference)

حالیہ نظرثانی بمطابق 06:53, 7 اپريل 2018

Abdul aziz khalid 2.jpg

شاعر: عبد العزیز خالد

نعتِ رسولِ آخر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

میں فنا اندر فنا ہوں تُو بقا اندر بقا

میں دغا اندر دغا ہوں تُو وفا اندر وفا


تُو شہادت در شہادت میں گماں اندر گماں

تُو یقیں اندر یقیں میں وسوسہ در وسوسہ


تُو سلامت در سلامت میں فریب اندر فریب

میں شکایت در شکایت تُو رضا اندر رضا


تُو تجلی در تجلی میں خسوف اندر خسوف

میں سیاہی در سیاہی تُو ضیا اندر ضیا


میں غیاب اندر غیاب و تُو ظہور اندر ظہور

تُو حضوری در حضوری میں غطا اندر غطا


میں تقاضا در تقاضا تُو شکیب اندر شکیب

میں تمنّا در تمنّا تُو غِنا اندر غِنا


میں جہالت در جہالت تُو شعور اندر شعور

تُو بصیرت در بصیرت میں عَمٰی اندر عَمٰی


تُو حقیقت در حقیقت میں مجاز اندر مجاز

میں ضلالت در ضلالت تُو ہُدٰی اندر ہُدٰی


میں فساد اندر فساد و تُو اماں اندر اماں

میں عداوت در عداوت تُو وِلا اندر وِلا


تولُو مَحبت در مَحبت میں ہوَس اندر ہوَس

میں نمائش در نمائش تُو حیا اندر حیا


تُو منافع در منافع میں زیاں اندر زیاں

میں سفاہت در سفاہت تُو ذکا اندر ذکا


میں عقوبت در عقوبت تُو نعیم اندر نعیم

میں کدورت در کدورت تُو صفا اندر صفا


تولُو عزیمت در عزیمت میں شکست اندر شکست

میں شقاوت در شقاوت تو شفا اندر شفا


میں خزاں اندر خزاں و تو بہار اندر بہار

میں سموم اندر سموم و تُو صبا اندر صبا


میں زوال اندر زوال و تُو کمال اندر کمال

تُو اصابت در اصابت میں خطا اندر خطا


میں گدائی در گدائی تُو عطا اندر عطا

میں بخیلی در بخیلی تُو سخا اندر سخا


تُو مقرّب، تُو مفضّل، تُو مخصّص تُو مُبیں

میں پراگندہ، میں راندہ، بے نوا، بے آسرا


تُو ہے سلطانِ سلاطیں میں فقیروں کا فقیر

تُو سرافرازِ مقامِ عَبدہُ، میں خاکِ پا


ہے تہی طَس، طٰہٰ، کھیعص

مجھ پہ یہ ازراہِ علمِ مِن لّدُن القا ہوا



پیشکش[ترمیم]

ابو المیزاب اویس

مزید دیکھیے[ترمیم]

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
نئے صفحات
نعت خوانی کے معروف کلام