آپ تو جانتے ہیں مرے کرب کو ، آپ سے کیا چھپا ہے بَھلا یا نبی ۔ سعود عثمانی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Naat Kainaat Saud Usmani.jpg

شاعر: سعود عثمانی


نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

آپ تو جانتے ہیں مرے کرب کو ، آپ سے کیا چھپا ہے بَھلا یا نبی !

میرے احوال پر بھی نظر کیجیے، آپ کو آپ کا واسطہ یا نبی !


آپ کا دین دنیا میں دائم رہے.سختیوں میں بھی ہم اس پہ قائم رہے

سخت مشکل ہے انگارہء سرخ کو یوں کفِ دست میں تھامنا یا نبی !


سال ہا سال سےکاٹتی ہیں یہاں ' کتنی نسلیں غلامی کی آزادیاں

یہ جو زنجیر ہے، کیا یہ تقدیر ہے.کیا کبھی ہم بھی ہوں گے رہا یا نبی.!


جنگلوں کے لیے باعث عار ہیں، یہ درندے جو قوموں کے سردار ہیں

ڈھونڈتی ہے نظر' کوئی راہ ِمفر' کوئی رہبر' کوئی رہنما یا نبی !


خود کو دھوکا دیا 'بس یہی خیر ہے' گرچہ واقف تھے ہم ، غیر تو غیر ہے !

سیکڑوں بار دنیا کے ہوکر رہے کوئی اپنا نہیں ہوسکا یا نبی !


لوگ بہرے پہاڑوں کے مانند تھے، بس ہماری صدا ئیں پلٹتے رہے

خود ہمارے سوا' کون سنتا بھلا ' تھا جو حرف ِندا ،یا خدا ! یا نبی !


روز اک حادثہ پیش آتا ہوا ' سابقہ حادثوں کو بھلاتا ہوا

اور سب سے بڑی قوم کی بےحسی ،سانحوں سے بڑا سانحہ یا نبی !


دل بدلتے نہیں دن بدلتے نہیں' چند قوموں کے ڈر سے نکلتے نہیں

کچھ نہیں ،سب کے سب ' کیا عجم کیا عرب ' ہیں جو گنتی میں بے انتہا یا نبی !


زرد سے سرخ تک ' شرق سے غرب تک'ہم فقط اک گماں ، ہم فقط ایک شک

ملک در ملک غم ،کتنی بھگتیں گے ہم' اپنے اعمال کی یہ سزا یا نبی !


اپنے ایندھن میں دن رات جلتے ہیں ہم 'بس پگھلتے ہیں اور بس پگھلتے ہیں ہم

اب تو دستِ طلب میں سکت بھی نہیں جو اٹھا پائے حرفِ دعا یا نبی !


اے وہ جس کے لیے ساری دنیا سجی' آپ کی قوم ہے آپ سے ملتجی

کیجیے اپنی چادر عطا یا نبی ! ، لوگ صدیوں سے ہیں بے ردا یا نبی


عمر بھر یوں ہی بھیجے درود آپ پر' جان قربان کردے سعودؔ آپ پر

یہ غلام آپ کا ' یہ سلام آپ کا' آپ کے نام صلّ ِ علٰٰی یا نبی !

مزید دیکھیے[ترمیم]

پرویز ساحر | حافظ محبوب احمد | ڈاکٹر عزیز فیصل | ڈاکٹر محمد حسین مشاہد رضوی | راحل بخاری | سلمان رسول | سید شاکر القادری | سید ضیا الدین نعیم | عباس عدیم قریشی | مجید اختر | محمد اسامہ سرسری | محمد عارف قادری | نورین طلعت عروبہ