تجھ سے ہے بہار ِ جان ِ عالم ۔ سرو سہارنپوری

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: سرو سہارنپوری

مجموعِہ کلام : زخمئہِ دل

نعتِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم[ترمیم]

تجھ سے ہے بہار جانِ عالم

اے چارہء بے کسان ِ عالم


تو اصلِ بنائے خلق ٹھہرا

تو عز و وقار و شان ِ عالم


سدرہ ترے خادموں کا مسکن

اے خواجہ ءِ خواجگان ِ عالم


مہکی نہ تھی بوئےخلق جب تک

ویران تھا گلستان ِ عالم


جب تک رے ذکر سے تہی تھا

بے رنگ تھی داستان ِ عالم


تارے ترے ہمرکاب ِ آئے

اے صاحب ِ کاروان ِ عالم


قطرے ترے فیض سے سمندر

اے منعم و مہربان ِ عالم


ذرے ترا نام لے کے اٹھے

اور بن کے گے کہکشان ِ عالم


اک تیری نظر سے ہو گئے ہیں

بے نام و نشاں ، نشان ِ عالم


در پر ترے آ کے جھک گئے ہیں

کیا کیا سر سر کشان ِ عالم


بھٹکے گا شعور مدتوں تک

معراج ہے امتحان ِ عالم

مزید دیکھیے[ترمیم]

سرو سہارنپوری