باد چلتی ہے یوں قرینے سے ۔ سلمان رسول

"نعت کائنات" سے
(باد چلتی ہے یوں قرینے سے سے پلٹایا گیا)

This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر: سلمان رسول

نعت رسول اکرمﷺ[ترمیم]

باد چلتی ہے یوں قرینے سے

جیسے آئی ہو یہ مدینے سے

اے حبیبِ خدا عنایت ہو

کچھ تو رحمت مجھے خزینے سے

آپ محشر کے دن لگا لینا

میرے آقا مجھے بھی سینے سے

سب جہانوں کے سارے پھولوں کی

باس کم تر ہے اس پسینے سے

جس میں حبّ رسولِ پاک نہ ہو

مرنا بہتر ہے ایسے جینے سے

گرچہ انساں ہوں میں فرومایہ

مجھ کو نسبت ہے اس سفینے سے

ایسا نبیوں میں ہے مقام ان کا

جیسے زیور میں ہوں نگینے سے

آپ پہنچے تھے عرش پر آقا

سدرۃ المنتہیٰ کے زینے سے

قرب سلمان کو ہے ان کا عزیز

حوض کوثر کا پانی پینے سے

پچھلا کلام[ترمیم]

مہر و مہ و انجم کی، تنویر کا وہ باعث

اگلا کلام[ترمیم]

یہ جو شہکار سے محبت ہے

مزید دیکھیے[ترمیم]

سلمان رسول | سلمان رسول کی حمدیہ و نعتیہ شاعری