ان کو آتا ہے رب العلی کا سلام ۔ حسن علی خاتم

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر : حسن علی خاتم

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

ان کو آتا ہے رب العلی کا سلام

سب ملائک کا کل انبیاء کا سلام

اصفیا، اتقیا، اولیا کا سلام

ان پہ ہر اہل_ قلب و سخا کا سلام

یا رسول معظم علیک سلام


وہ ھمارے نبی، وہ خدا کے نبی

لوح_ محفوظ و عرش العلی کے نبی

وہ رسل کے رسول، انبیا کے نبی

آپ ہیں ساری خلق_ خدا کے نبی

آپ پر ساری خلق_ خدا کا سلام


مصطفی، خلق_ اعظم، صلوت و سلام

مجتبی، رشک_ آدم، صلوت و سلام

وہ رسول_ مکرم، صلوت و سلام

ان کی خدمت میں ہر دم، صلوت و سلام

ان پہ جنت کی آب و ھوا کا سلام


ھے سلام ان کی عظمت پہ پڑھتا سلام

عرض کرتا ھے خدمت میں کعبہ سلام

ان کے تلووں کو کرتی ھے سدرہ سلام

ان کی راہ_ گذر ھے سراپا سلام

ان کو روح الامیں دیں خدا کا سلام


جن کے سب ناز نخرے اٹھاۓ خدا

جن کی مرضی سے کعبہ بناۓ خدا

جن کو عرش_ بریں پر بلاۓ خدا

جن سے ملنے کو دھرتی پہ آۓ خدا

ان کی دہلیز کو منتہی کا سلام


جن کو محشر کا دولھا بناۓ خدا

ھو مدثر، مزمل نواۓ خدا

جن کی زلفوں کے کنڈھل بناۓ خدا

جن کے چہرے کی قسمیں اٹھاۓ خدا

ان پہ حسن و جمال و ادا کا سلام


جس نظر پر عیاں ہیں زمان و مکاں

یہ زمیں، وہ زمیں، سات سات آسماں

کیا بہشت و ملک، عرش، کیا لامکاں

جس پہ ھر دم عیاں، خالق_ دو جہاں

اس نظر پہ جمال_ خدا کا سلام

اس کمال_ نظر پہ خدا کا سلام


یونہی ہنستا رھے مصطفی کا چمن

ذکر ان کا رھے رونق_ انجمن

ان کی نعتوں سے روشن ھو میرا سخن

حشر میں بھی اٹھوں تو ھو لب پر، حسن

یا رسول_ معظم علیک سلام