منیر نیازی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Munir Niazi.jpg


ایک اور دریا کا سامنا تھا منیرؔ مجھ کو

میں ایک دریا کے پار اترا تو میں نے


منیر نیازی 9 اپریل 1928ء کو مشرقی پنجاب کے شہر ہوشیار پور میں پیدا ہوئے تھے۔

انہوں نے اردو کے 13 اور پنجابی کے 3 شعری مجموعے یادگار چھوڑے انہوں متعدد فلموں کے نغمات بھی تحریر کئے جو بے حد مقبول ہوئے۔

منیر نیازی کی خدمات کے اعتراف کے طور پر حکومت پاکستان نے انہیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی اور ستارہ امتیاز اور اکادمی ادبیات پاکستان نے کمال فن ایوارڈ سے نوازا تھا۔26 دسمبر 2006ء کومنیر نیازی لاہور میں وفات پاگئے۔وہ لاہور میں قبرستان ماڈل ٹاون کے بلاک میں آسودۂ خاک ہیں۔


نعتیہ شاعری[ترمیم]

میں کہ اک برباد ہوں آباد رکھتا ہے مجھے

دیر تک اسمِ محمد شاد رکھتا ہے مجھے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

​ کیسے ہون گے گلی محلے کیہڑی طراں دیاں راہواں

اندروں گھر کیسے ہوون گے کیسیاں باہرلیاں تھانواں

رونق اوہناں ہزاراں دی تے لوکاں دیاں صداواں

دور دراز دیاں سفراں اندر ٹھہرن لئی سراواں

رات دناں وچ قافلے چلدے رُتاں دیاں ہواواں

کویں میں ایڈا پینڈا کٹ کے اوس سمے وچ جانواں

کویں میں اوہ تصویراں کھچ کے دنیا کول لیاواں

کویں میں اج دے شہراں نوں اوہ حسن دی جھلک وخاواں

شہر مبارک اوہناں دناں دے سوہنیاں دُھپاں چھانواں

جنہاں چ پھریا شام سویرے احمد دا پرچھانواں​

مزید دیکھیے[ترمیم]

احمد ندیم قاسمی | احمد فراز | امجد اسلام امجد | فیض احمد فیض | ظفر اقبال | ناصر کاظمی