"حسنین رضا" کے اعادوں کے درمیان فرق

"نعت کائنات" سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش
(نیا صفحہ: link=حسنین رضا زمرہ: شعراء زمرہ: کراچی {{ بسم اللہ }} حسنین رضا کا تعلق...)
 
(Dictation Correction)
(ایک متوسط نظرثانیایک ہی صارف کی جانب سے نہیں دکھائی گئی)
لکیر 2: لکیر 2:
  
 
[[زمرہ: شعراء ]]
 
[[زمرہ: شعراء ]]
[[زمرہ: کراچی]]
+
[[زمرہ: مظفر گڑھ]]
  
 
{{ بسم اللہ }}
 
{{ بسم اللہ }}
 +
[[ زمرہ: شعراء ]]
 +
[[زمرہ: نعت گو شعراء ]]
 +
[[ زمرہ: نعت خواں]]
 +
[[زمرہ: ناقدین و محققین]]
 +
[[زمرہ: مظفر گڑھ ]]
 +
{|  style="background-color:#ffffff; margin-left: 10px;"
 +
|
 +
{| class="wikitable" style=" margin-right: 2px;"
 +
!style="height:6px; width:150px; background-color:##eae8e0; text-align:center;  ;" | [[سید حسنین رضا ہاشمی]]
 +
|}
 +
|
 +
{| class="wikitable" style=" margin-right: 2px;"
 +
!style="height:6px; width:150px; background-color:##eae8e0; text-align:center;  ;" | [[سید حسنین رضا ہاشمی کی شاعری | شاعری]]
 +
|}
 +
|}
  
حسنین رضا کا تعلق [[کراچی]] سے ہے اور آپ صاحب ِ کتاب نعت گو شاعر ہیں۔
+
[[زمرہ: شعراء ]]
 +
[[زمرہ: نعت گو شعراء ]]
 +
 
 +
[[سید حسنین رضا ہاشمی]] کے پردادا تقسیمِ ہند کے موقع پر ہندوستان کے شہر پٹیالہ سے ہجرت کر کے کچھ عرصہ لاہور اور پھر جھنگ میں گزارنے کے بعد خانیوال مستقل طور پر رہائش پذیر وئی۔ جبکہ [[سید حسنین رضا ہاشمی]]  ضلع مظفر گڑھ میں رہائش پذیر ہیں۔ 
 +
 
 +
=== تعلیم و تربیت ===
 +
 
 +
ابتدائی تعلیم مظفر آباد سے حاصل کی جبکہ بی کام ملتان کامرس کالج ملتان سے مکمل کرنے کے بعد ایم بی اے ایچ آر  علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اسلام آباد سے کیا۔
 +
 
 +
ناظرہ قرآن  والدہ محترمہ سے اور مرکزی جامع مسجد توکلیہ کے امام و خطیب حافظ امان اللہ مقصودی (مرحوم)
 +
 
 +
=== نعت گوئی کا سفر ===
 +
 
 +
2003ء میں میٹرک کے امتحانات کے بعد والد محترم کی دکان پر بیٹھے ایک دن کاغذ پر نعت کہی کیسے یہ تو نہیں معلوم کہ کیسے لکھی گئی ہاں مگر لکھ کر بہت سکون حاصل ہوا تب سے یہ سلسلہ اللہ عزوجل اور نبی علیہ السلام کے کرم سے جاری ہے اللہ پاک اسے جاری و ساری رکھے آمین
 +
 
 +
پہلی نعت جس کا پہلا شعر یہ تھا
 +
 
 +
اے والیء مدینہ بلوائیے مدینہ
 +
 
 +
مشکل ہوا ہے جینا بلوائیے مدینہ
 +
 
 +
 
 +
نعت مکمل ہونے پر گھر والدین دوست احباب کے سامنے پڑھی سب نے دعاؤں سے نوازا.
 +
 
 +
 
 +
===ان کے استاد کون ہیں ۔ کن لوگوں نے رہنمائی کی===
 +
 
 +
نعتیہ شاعری کی شروعات میں اپنے والد محترم, غلام اکبر غازی, سلطان ناصر, افضل چوہان, راشد ترین, صابر انصاری سے رہنمائی کی جب کہ میرے استاد سلیم نتکانی ہیں جو گونج ادبی فاؤنڈیشن مظفرگڑھ کے چئیرمین ہیں
 +
 
 +
 
 +
 
 +
=== دیگر معلومات ===
 +
 
 +
'''پسندیدہ شعراء :-'''  [[مولانا الیاس قادری]], [[عبد الستار نیازی]], [[محمد علی ظہوری]], [[صبیح الدین صبیح رحمانی]], [[عزیز الدین خاکی]] شامل ہیں
 +
 
 +
 
 +
'''پسندیدہ نوجوان نعت گو شاعر :- ''' [[ سرور حسین نقشبندی ]],  [[ریاض ندیم نیازی]]
 +
 
 +
 
 +
''پسندیدہ بزرگ نعت خواں :-'' [[سید صبیح الدین سہروردی]], [[اویس رضا قادری]], [[صدیق اسماعیل]], [[قاری وحید ظفر قاسمی]], [[غلام اصغر غازی سعیدی]]
 +
 
 +
==== نعت گوئی کے بارے میں نظریہ :-  ====
 +
 
 +
نعت گوئی ایک سعادت ہے جو انسان کو کوشش سے نہیں بلکہ اللہ نبی علیہ السلام کے کرم سے عطا ہوتی ہے نعت گوئی سنتِ خداوندی ہے ہمارے سامنے نعت کی ایک مستند کتاب قرآن مجید ہے۔ نعت گوئی عہدِ میثاق سے اب تلک بدرجہ اتم جاری ہے اور یہ ہمیشہ جاری و ساری رہے گی...نعت گوئی کے ذریعے شعرا اپنے عقیدت اور محبت کا اظہار کرتے ہیں مگر نعت گوئی کا حق ادا کرنا ممکن نہیں وہ اس لیے کہ یہ انسان  کے بس کی بات نہیں جس کی تعریف خود خالقِ کائنات کرے اس کی تعریف کا حق بھلا انسان  کیسے ادا کر سکتا ہے ہاں عقیدت کا اظہار ممکن ہے
 +
 
 +
==== نعت خوانی کے بارے میں نظریہ :-  ====
 +
 
 +
نعت خوانی بھی عہدِ میثاق سے جاری ہے عہدِ میثاق وہ مقدس لمحات جس میں خود ربِ لم یزل سے بزم کا اہتمام کیا اور انبیا و رسل کی جماعت بلائی اور سب کے سامنے شانِ رسالت بیان کی اور تمام نبیوں رسولوں نے تائید کی..ہر دور میں نعت خوانی ہوتی رہی ہے آدم کا دور ہو یا شیث کا نوح کا دور ہو یا داؤد کا موسی کا دور ہو یا عیسیٰ کا الغرض ہر دور نعت خوانی کے فیضان سے معمور رہا اور آج بھی یہ نورانی سلسلہ جاری ہے
 +
 
 +
===نعت خوانی کی خدمات پر نعت ورثہ کے بارے آپ کی رائے===
 +
 
 +
نعت ورثہ نعت گو حضرات کے لیے اکیڈمی ہے جہاں نہ صرف ان کے کلام محفوظ ہیں بلکہ نعت گو حضرات کی حوصلہ افزائی اور اصلاح کے پرنور موتی اپنا چمک دمک سے نعت ورثہ میں شامل ہر نعت گو چمک دمک رہا ہے میں حیران ہوتا ہوں کم عرصے میں نعت ورثہ کی مقبولیت آسمانوں کو چھو رہی ہے۔ اللہ پاک اسے مزید ترقی دے آمین
  
 
=== مزید دیکھیے  ===
 
=== مزید دیکھیے  ===

تـجدید بـمطابق 12:53, 28 نومبر 2019

"Hasnain Raza"

سید حسنین رضا ہاشمی
شاعری
سید حسنین رضا ہاشمی کے پردادا تقسیمِ ہند کے موقع پر ہندوستان کے شہر پٹیالہ سے ہجرت کر کے کچھ عرصہ لاہور اور پھر جھنگ میں گزارنے کے بعد خانیوال مستقل طور پر رہائش پذیر وئی۔ جبکہ سید حسنین رضا ہاشمی ضلع مظفر گڑھ میں رہائش پذیر ہیں۔

تعلیم و تربیت

ابتدائی تعلیم مظفر آباد سے حاصل کی جبکہ بی کام ملتان کامرس کالج ملتان سے مکمل کرنے کے بعد ایم بی اے ایچ آر علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اسلام آباد سے کیا۔

ناظرہ قرآن والدہ محترمہ سے اور مرکزی جامع مسجد توکلیہ کے امام و خطیب حافظ امان اللہ مقصودی (مرحوم)

نعت گوئی کا سفر

2003ء میں میٹرک کے امتحانات کے بعد والد محترم کی دکان پر بیٹھے ایک دن کاغذ پر نعت کہی کیسے یہ تو نہیں معلوم کہ کیسے لکھی گئی ہاں مگر لکھ کر بہت سکون حاصل ہوا تب سے یہ سلسلہ اللہ عزوجل اور نبی علیہ السلام کے کرم سے جاری ہے اللہ پاک اسے جاری و ساری رکھے آمین

پہلی نعت جس کا پہلا شعر یہ تھا

اے والیء مدینہ بلوائیے مدینہ

مشکل ہوا ہے جینا بلوائیے مدینہ


نعت مکمل ہونے پر گھر والدین دوست احباب کے سامنے پڑھی سب نے دعاؤں سے نوازا.


ان کے استاد کون ہیں ۔ کن لوگوں نے رہنمائی کی

نعتیہ شاعری کی شروعات میں اپنے والد محترم, غلام اکبر غازی, سلطان ناصر, افضل چوہان, راشد ترین, صابر انصاری سے رہنمائی کی جب کہ میرے استاد سلیم نتکانی ہیں جو گونج ادبی فاؤنڈیشن مظفرگڑھ کے چئیرمین ہیں


دیگر معلومات

پسندیدہ شعراء :- مولانا الیاس قادری, عبد الستار نیازی, محمد علی ظہوری, صبیح الدین صبیح رحمانی, عزیز الدین خاکی شامل ہیں


پسندیدہ نوجوان نعت گو شاعر :- سرور حسین نقشبندی , ریاض ندیم نیازی


پسندیدہ بزرگ نعت خواں :- سید صبیح الدین سہروردی, اویس رضا قادری, صدیق اسماعیل, قاری وحید ظفر قاسمی, غلام اصغر غازی سعیدی

نعت گوئی کے بارے میں نظریہ :-

نعت گوئی ایک سعادت ہے جو انسان کو کوشش سے نہیں بلکہ اللہ نبی علیہ السلام کے کرم سے عطا ہوتی ہے نعت گوئی سنتِ خداوندی ہے ہمارے سامنے نعت کی ایک مستند کتاب قرآن مجید ہے۔ نعت گوئی عہدِ میثاق سے اب تلک بدرجہ اتم جاری ہے اور یہ ہمیشہ جاری و ساری رہے گی...نعت گوئی کے ذریعے شعرا اپنے عقیدت اور محبت کا اظہار کرتے ہیں مگر نعت گوئی کا حق ادا کرنا ممکن نہیں وہ اس لیے کہ یہ انسان کے بس کی بات نہیں جس کی تعریف خود خالقِ کائنات کرے اس کی تعریف کا حق بھلا انسان کیسے ادا کر سکتا ہے ہاں عقیدت کا اظہار ممکن ہے

نعت خوانی کے بارے میں نظریہ :-

نعت خوانی بھی عہدِ میثاق سے جاری ہے عہدِ میثاق وہ مقدس لمحات جس میں خود ربِ لم یزل سے بزم کا اہتمام کیا اور انبیا و رسل کی جماعت بلائی اور سب کے سامنے شانِ رسالت بیان کی اور تمام نبیوں رسولوں نے تائید کی..ہر دور میں نعت خوانی ہوتی رہی ہے آدم کا دور ہو یا شیث کا نوح کا دور ہو یا داؤد کا موسی کا دور ہو یا عیسیٰ کا الغرض ہر دور نعت خوانی کے فیضان سے معمور رہا اور آج بھی یہ نورانی سلسلہ جاری ہے

نعت خوانی کی خدمات پر نعت ورثہ کے بارے آپ کی رائے

نعت ورثہ نعت گو حضرات کے لیے اکیڈمی ہے جہاں نہ صرف ان کے کلام محفوظ ہیں بلکہ نعت گو حضرات کی حوصلہ افزائی اور اصلاح کے پرنور موتی اپنا چمک دمک سے نعت ورثہ میں شامل ہر نعت گو چمک دمک رہا ہے میں حیران ہوتا ہوں کم عرصے میں نعت ورثہ کی مقبولیت آسمانوں کو چھو رہی ہے۔ اللہ پاک اسے مزید ترقی دے آمین

مزید دیکھیے

اپنے تازہ کلام اس نمبر پر وٹس ایپ کریں 00923214435273

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

نعت کائنات پر نئی شخصیات
"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
نئے صفحات