جانب منزل محبوب سفر میرا ہے ۔ مظہر الدین مظہر

"نعت کائنات" سے
This is the latest revision of this page; it has no approved revision.
نظرثانی بتاریخ 09:34, 1 اگست 2017 از تیمورصدیقی (تبادلۂ خیال | شراکت) (نیا صفحہ: {{بسم اللہ}} شاعر: مظہر الدین مظہر ==== {{نعت}} ==== جانب منزل محبوب سفر میرا ہے ہائے کس عالم مستی میں...)

(فرق) ←پرانی تدوین | حالیہ نظرثانی (فرق) | →اگلا اعادہ (فرق)
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر: مظہر الدین مظہر

نعتِ رسولِ آخر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

جانب منزل محبوب سفر میرا ہے

ہائے کس عالم مستی میں گزر میرا ہے


آج ہر اشک میں رنگینی و رعنائی ہے

قابل دید ہر اک لعل و گہر میرا ہے


جن کو جلووں کو ترستی ہے ملائک کی نظر

انہی رستوں ، انہی راہوں میں گزر میرا ہوگا


جسے کہتے ہیں مدینہ، وہ ہے جنت میری

جسے کہتا ہے جہاں طیبہ، وہ گھر میرا ہے


شکر ایزد در رحمت پہ جبیں ہے میری

شکر ایزد در سرکار پہ سر میرا ہے


شق کا بار فرشتوں سے اٹھایا نہ گیا

عشق کو میں نے صدا دی، یہ جگر میرا ہے