"اے خدا حشر میں اس طور نبھایا جاوں" کے اعادوں کے درمیان فرق

"نعت کائنات" سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش
(نیا صفحہ: اے خدا حشر میں اس طور نبھایا جاوں ان کے دریوزہ گروں ہی میں اٹھایا جاوں میں نے مانگی ہے دعا ان کا وس...)
 
 
لکیر 18: لکیر 18:
  
 
"اوج آزاد کیا ہم نے" سنایا جاوں
 
"اوج آزاد کیا ہم نے" سنایا جاوں
 +
 +
[[مرزا حفیظ اوج]]

حالیہ نظرثانی بمطابق 16:53, 10 فروری 2020

اے خدا حشر میں اس طور نبھایا جاوں

ان کے دریوزہ گروں ہی میں اٹھایا جاوں

میں نے مانگی ہے دعا ان کا وسیلہ دے کر

پھر غم ِ دہر سے کیونکر نہ بچایا جاوں

میں نکما ہی سہی ان سے ہے نسبت میری

کب ہے ممکن سر ِ کوثر نہ بلایا جاوں

وقت ِ آخر ہو مرے لب پہ سجی نعت ِنبی

اور غلامان ِ محمد میں سلایا جاوں

جان پر جب ہو بنی شافع محشر للہ

"اوج آزاد کیا ہم نے" سنایا جاوں

مرزا حفیظ اوج