چشمِ بے چین کا چین ‘ دل کا سکوں ‘ روحِ انساں کی لذّت مدینے میں ہے

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Abdul Jalil.jpg

عبد الجلیل
شاعری
مہکار مدینے کی
اپنے تازہ کلام اس نمبر پر وٹس ایپ کریں 00923214435273

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

شاعر : عبد الجلیل

نعتِ رسولِ آخر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

چشمِ بے چین کا چین ‘ دل کا سکوں ‘ روحِ انساں کی لذّت مدینے میں ہے

جاہ و منصب کا ہونا بڑی شے سہی پر مسلماں کی عزّت مدینے میں ہے


ہر مسلمان جویائے ایمان ہے کیونکہ ایمان ہی اس کی پہچان ہے

ہاں مگر یہ حقیقت ہے ایمان کی روح پرورحلاوت مدینے میں ہے


ہے کسی کی تمنا کہ دولت ملے اور کسی کی ہے خواہش کہ جنت ملے

مومنوں کی ہے دولت درِ مصطفٰےؐ اہلِ ایماں کی جنت مدینے میں ہے


عشق سرکارؐ میں جو بھی سر شار ہے اُس کی منزل فقط اُن کا دیدار ہے

اُس کے غم کا نہیں ہے مداوا کوئی اُس پریشاں کی راحت مدینے میں ہے


مانگنے کا سلیقہ اگر پاس ہو اور طلب میں ذرا سا بھی اخلاص ہو

اپنے دامن کو جاکر پسارو وہیں ‘ ساری دنیا کی ثروت مدینے میں ہے


اے جلیل! اُن کے در کی گدائی ملے ‘ اس سے بڑھ کر تو کوئی بھی منصب نہیں

میرے دل کی تمنا یہی ہے فقط میرے ایماں کی چاہت مدینے میں ہے



مزید دیکھیے[ترمیم]

اپنے تازہ کلام اس نمبر پر وٹس ایپ کریں 00923214435273

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

نئے اضافہ شدہ کلام
"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
نئے صفحات