نبی سرورِ ہر رسول و ولی ہے۔ امام احمد رضا خان بریلوی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر : امام احمد رضا خان بریلوی

کتاب : حدائق بخشش

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

نبی سَروَرِ ہر رسول و ولی ہے

نبی راز دارِ مَعَ اللہ لِیْ ہے


وہ نامی کہ نامِ خُدا نام تیرا

رؤف و رحیم و علیم و علی ہے


ہے بے تاب جس کے لیے عرشِ اعظم

وہ اس رہروِ لا مکاں کی گلی ہے


نکیرین کرتے ہیں تعظیم میری

فدا ہو کے تجھ پر یہ عزّت ملی ہے


تلاطم ہے کشتی پہ طوفانِ غم کا

یہ کیسی ہوائے مخالف چلی ہے


نہ کیوں کر کہوں یَا حَبِیْبِیْ اَغِثْنِیْ

اِسی نام سے ہر مصیبت ٹلی ہے


صبا ہے مجھے صرصرِ دشتِ طیبہ

اِسی سے کلی میرے دل کی کھلی ہے


تِرے چاروں ہمدم ہیں یک جان یک دل

ابو بکر، فاروق، عثماں، علی ہے


خدا نے کیا تجھ کو آگاہ سب سے

دو عالم میں جو کچھ خفی و جلی ہے


کروں عرض کیا تجھ سے اے عالِمُ السّر

کہ تجھ پر مِری حالتِ دل کھلی ہے


تمنّا ہے فرمائیے روزِ محشر

یہ تیری رہائی کی چٹّھی ملی ہے


جو مقصد زیارت کا برآئے پھر تو

نہ کچھ قصد کیجے یہ قصدِ دلی ہے


تِرے در کا درباں ہے جبریلِ اعظم

تِرا مدح خواں ہر نبی و ولی ہے


شفاعت کرے حشر میں جو رضؔا کی

سوا تیرے کس کو یہ قدرت ملی ہے


مزید دیکھیے[ترمیم]

سونا جنگل رات اندھیری چھائی بدلی کالی ہے | نبی سرورِ ہر رسول و ولی ہے | نہ عرش ایمن نہ اِنِّیْ ذَاہِبٌ میں میہمانی ہے

امام احمد رضا خان بریلوی | حدائق بخشش