غالب کے اردو نعتیہ اشعار

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Asad UllaH Khan Ghalib.jpg

غالب
فارسی اشعار
اردو اشعار
21 اپریل پہلی قومی ادبی نعت کانفرنس

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png



1:۔ اس کی امت میں ہوں میں، میرے رہیں کیوں کام بند

واسطے جس شہ ﷺ کے، غالبؔ! گنبدِ بے در کھلا


2:۔کل کیلئے کر آج نہ خست شراب میں

یہ سوءِ ظن ہے ساقیِ کوثرﷺ کے با ب میں


3:۔ یہ کس بہشت شمائل کی آمد آمد ہے!

کہ غیر جلوہء گل ، رہگزر میں خاک نہیں


4:۔ بہت سہی غمِ گیتی، شراب کم کیا ہے

غلامِ ساقیِ کوثرﷺ ہوں، مجھ کو غم کیا ہے


5:۔ پھر جی میں ہے کہ در پہ کسی کے پڑے رہیں

سر زیر بارِ منتِ درباں کیے ہوئے


6:۔ زباں پہ بارِ خدایا! یہ کس کا نام آیا

کہ میرے نطق نے بوسے میری زباں کے لیے


7:۔منظور تھی یہ شکل تجلی کو نور کی

قسمت کھلی ترے قد و رخ سے ظہور کی​



21 اپریل پہلی قومی ادبی نعت کانفرنس

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

نئے اضافہ شدہ کلام
"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
نئے صفحات