عشق تیرا نہ اگر میرا مسیحا ہوتا ۔ اعظم چشتی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر: اعظم چشتی

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم[ترمیم]

عشق تیرا نہ اگر میرا مسیحا ہوتا

میں بھی گمراہی کے ویرانوں میں کھویا ہوتا


تیری نسبت نے سنوارا میرا انداز حیات

میں اگر تیرا نہ ہوتا تو سگ دنیا ہوتا


کاش یہ آنکھ تیری راہ کے تنکے چنتی

دل تیرے شہر کی گلیوں میں سلگتا ہوتا


کوئے سرکار میں ہوگا کہیں مصروف طواف

دل اگر سینے میں ہوتا تو دھڑکتا ہوتا


خاک ہوتا تو ہواوں سے لپٹ کر اعظم

آستان شہہ لولاک پہ پہنچا ہوتا

مزید دیکھیے[ترمیم]

اعظم چشتی | محمد علی ظہوری | عبدالستار نیازی | مظفر وارثی | احمد علی حاکم | محمد عارف قادری