صبح بھی اچھی لگی اور شام بھی اچھی لگی ۔ خمار بارہ بنکوی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Khummar Bara Bankvi.jpg

شاعر : خمار بارہ بنکوی

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم =[ترمیم]

صبح بھی اچھی لگی اور شام بھی اچھی لگی

مجھ کو سوتے جاگتے یادِ نبی اچھی لگی


خود تو فاقہ کش مگر کونین کے حاجت روا

رحمت للعالمیں کی مفلسی اچھی لگی


میرے آقا ہوکے جن گلیوں سے گذرے تھے کبھی

اب تک ان گلیوں میں خوشبو سی بسی اچھی لگی


دشمنوں نے بے لڑے ، تلواریں اپنی پھینک دیں

آب و تابِ تیغِ اخلاقِ نبی اچھی لگی


کہہ کے نعتِ مصطفیٰ ، میں جھوم جھوم اٹھا خمارؔ

عمر بھر میں آج اپنی شاعری اچھی لگی

مزید دیکھیے[ترمیم]

خسروی اچھی لگی نہ سروری اچھی لگی ۔ عبدالستار نیازی

اپنے تازہ کلام اس نمبر پر وٹس ایپ کریں 00923214435273

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
زیادہ پڑھے جانے والے کلام
نئے صفحات