سر محفل کرم اتنا مرے سرکار ہو جائے ۔ صوفی حبیب وارثی

"نعت کائنات" سے
(سر محفل کرم اتنا مرے سرکار ہو جائے ۔ حبیب پینٹر سے پلٹایا گیا)

This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر: حبیب وارثی

نعتِ رسولِ آخر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

سرِ محفل کرم اتنا مرے سرکار ہو جائے

نگاہیں منتظر رہ جائیں اور دیدار ہو جائے


تصور میں تری ہر شے پہ یوں نظریں جماتا ہوں

نہ جانے کون سی شئے میں ترا دیدار ہو جائے


غلامِ مصطفیٰ بن کر میں بکِ جاوؔں مدینے میں

محمد نام پہ سودا سرِ بازار ہو جائے


سنبھل کر پاوؔں رکھنا حاجیو شہرِ مدینہ میں

کہیں ایسا نہ ہو سارا سفر بیکار ہو جائے


فنا اتنا تو ہو جاوؔں میں تیری ذات عالی میں

جو مجھ کو دیکھ لے اس کو ترا دیدار ہو جائے


تجھے منظور ہے پردہ مجھے پاسِ ادب ورنہ

میں جب چاہوں جہاں چاہوں ترا دیدار ہو جائے


حبیب اس حال سے ابتر بھی حال زار ہو جائے

جو ہونا ہو سو ہو جائے مگر دیدار ہو جائے