سرکار یہ نام تمہارا، سب ناموں سے ہے پیارا ۔ ریاض الدین سہروردی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر: ریاض الدین سہروردی

نعتِ رسولِ آخر صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

سرکار یہ نام تمھارا، سب ناموں سے ہے پیارا

اس نام سے چمکا سورج،اور چمکا چاند ستارہ

ہوا ہر سو خوب اجالہ ،ہوا روشن عالم سارا

میرا نام کرے گا روشن،دو جگ میں نام تمھارا


جب رب قدیر تمھاری ، کرے خود ہی مدح سرائی

ہر ایک کے لبوں پر پھر تو تعریف تمھاری آٰٗئی

سد شکر کے ذکر تمھارا۔ رھے ہر دم ورد ہمارا

میرا نام کرے گا روشن،دو جگ میں نام تمھارا


ہر وقت عطا پر ہم نے، دیکھا ہے تمھیں تو مائل

در پاک پہ آیا جب بھی ، کیسا ہی کوئی سائل

اے رحمت عالم تم نے ، اسے کر ہی لیا ہے گوارا

میرا نام کرے گا روشن دو جگ میں نام تمھارا


سائل ہوں تیرے در کا ، ملے مجھ کو بھیک کرم کی

رکھ لاج اے میرے آقا ، اس میری چشم نم کی

کروں گنبد خضرا کا ، پھرآنکھوں سے اپنی نظارہ

میرا نام کرے گا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا


جب روز قیامت ہر ایک ، بولے گا نفسی نفسی

اور داد کسی کی دے گا محشر میں جب نہ کوئی

ایسے میں عطا ہو مجھ کو ، اے شافعہ حشر سہارا

میرا نام کرے گا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا


لہروں نے میری یہ کشتی ہرجانب سے ہے گھیری

سرکار خبر لو میری ، سرکار خبر لو میری،

ملے مجھ کو عافیت کا ، میرے آقا جلد کنارا

میرا نام کرے گا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا


جو مجھ پر بیت رہی ہے ، وہ کس کو کیسے بتاؤں

اور اپنے دل کی حکایت، بھلا کس کو جاکے سناؤں

تم مہر میں راز ہو میرے ، میری داد رسی ہو خدارا

میرا نام کرے گا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا


میری عرض خدارا سن لو، میرے حال پہ مجھ کونہ چھوڑو

ذرا اپنی چشم عنایت ، بے بس کی طرف بھی موڑو

بے کس کا تم ہو سہارا ، بے چارے کا تم ہو چارا

میرا نام کرےگا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا


دو اپنے عشق کی دولت ، مجھے اپنی آل صدقہ

یہ ریاض فقیر ازل سے تیرے در کا ہی ہے شاہ

تیرے دست عطا کے آ گے ، دامن ہے اس نے پسارا

میرا نام کرے گا روشن ، دو جگ میں نام تمھارا