سایہ ءِ عشق نبی دل پہ پڑا اچھا لگا ۔ نسرین سید

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

Logo naat virsa.jpg

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: نسرین سید

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

سایہء عشقِ نبی دل پہ پڑا، اچھا لگا

ہوں محمدؐ کے غلاموں میں، بڑا اچھا لگا


دلِ بے خود کو خبر ہے کہاں ہے جُود و عطا

درِ آقاؐ پہ ........ یہ مجذوب کھڑا اچھا لگا


شوقِ دیدار میں پلکوں پہ لرزتا ہوا اشک!

اُنؐ کی چوکھٹ پہ نگینہ یہ جڑا، اچھا لگا


مِدحتِ پاک کہاں ہوتی، بجز عشقِ نبیؐ

عشق کا تیر مرے دل میں گڑا، اچھا لگا


تھا کرم جوش میں ایسا کہ مرے دامن میں

باغِ رحمت سے شگوفہ جو جھڑا، اچھا لگا


اب کے چوکھٹ سے یہ دل اُٹھ کے نہیں جانے کا

میرے آقاؐ کو بھی یہ ضد پہ اڑا اچھا لگا


سینت رکھا ہے مدینے کی حسیں یادوں کو

دل کے حُجرے میں، خزانہ یہ پڑا اچھا لگا

مزید دیکھیے[ترمیم]

نئے اضافہ شدہ کلام
اپنے تازہ کلام اس نمبر پر وٹس ایپ کریں 00923214435273

اپنے ادارے کی نعتیہ سرگرمیاں، کتابوں کا تعارف اور دیگر خبریں بھیجنے کے لیے رابطہ کیجئے۔Email.png Phone.pngWhatsapp.jpg Facebook message.png

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659
نئے صفحات