سامنے ہیں سرورِؐ کون و مکاں ، آہستہ بول ۔ شوکت ہاشمی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: شوکت ہاشمی

نعت رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم[ترمیم]

سامنے ہیں سرورِؐ کون و مکاں ، آہستہ بول

اے لبِ لرزاں!دلِ گریہ کُناں! آہستہ بول

اے و فورِ شوق! اے جذبِ رواں! آہستہ بول

یہ سماں ہے صبحِ طیبہ کاسماں ، آہستہ بول

اے غلامِ مصطفےٰؐ! یہ ہے مقامِ مصطفےٰؐ

آپؐ محوِ استراحت ہیں یہاں ، آہستہ بول

میرے اُن کے درمیاں حرفِ سخن کچھ اور ہے

اے زمانے! میرے اُن کے درمیاں آہستہ بول

میں زمینِ گلشنِ طیبہ پہ ہوں محوِ خرام

اے دیارِ کہکشاں! اے آسماں! آہستہ بول

یہ دیارِ سرورِؐ دیں ہے ،ذرا آہستہ چل

آرہی ہے دل کے کعبے سے اذاں،آہستہ بول

بولناچاہوں اگرمیں اپنے آقاؐ کے حضور

بول اُٹھتا ہے مرا دردِ نہاں ، آہستہ بول

یہ سلامِ زندگی پیشِ امامِ زندگی

بولنے والے ! مثالِ قدسیاں آہستہ بول

لُطف توجب ہے کہ اُن سے بات ہوبولے بغیر

بول لیکن صاحبِ تسلیمِ جاں! آہستہ بول

رحمتِ کُل سے زبانِ گلفشاں میں بات کر

بات کر، پھر بھی زبانِ گلفشاں! آہستہ بول

بولنا واجب نہیں سرکارؐ کے دربار میں

آپ سُن لیتے ہیں اشکوں کی زباں ،آہستہ بول

اُن کوبے حرف وصدا بھی پیش کرتے ہیں سلام

کیا زمیں ،کیاآسماں ،کیا اِنس وجاں،آہستہ بول

رسائل و جرائد جن میں یہ کلام شائع ہوا[ترمیم]

نعت رنگ ۔شمارہ نمبر 25