دل کو اُن سے خدا جدا نہ کرے۔ امام احمد رضا خان بریلوی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

شاعر : امام احمد رضا خان بریلوی

کتاب : حدائق بخشش

نعت ِ رسول ِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

دل کو اُن سے خدا جدا نہ کرے

بے کسی لوٹ لے خدا نہ کرے


اس میں روضہ کا سجدہ ہو کہ طواف

ہوش میں جو نہ ہو وہ کیا نہ کرے


یہ وہی ہیں کہ بخش دیتے ہیں

کون ان جرموں پہ سزا نہ کرے


سب طبیبوں نے دے دیا ہے جواب

آہ عیسیٰ اگر دوا نہ کرے


دل کہاں لے چلا حرم سے مجھے

ارے تیرا برا خدا نہ کرے


عذر امید عفو گر نہ سنیں

رو سیاہ اور کیا بہانہ کرے


دل میں روشن ہے شمعِ عشقِ حضور

کاش جوشِ ہوس ہوا نہ کرے


حشر میں ہم بھی سیر دیکھیں گے

منکر آج اُن سے التجا نہ کرے


ضعف مانا مگر یہ ظالم دل

اُن کے رستے میں تو تھکا نہ کرے


جب تری خو ہو سب کا جی رکھنا

وہی اچھا جو دل برا نہ کرے


دل سے اک ذوقِ مے کا طالب ہوں

کون کہتا ہے اتقا نہ کرے


لے رضا سب چلے مدینے کو

میں نہ جاؤں ارے خدا نہ کرے


مزید دیکھیے[ترمیم]

سب سے اَولٰی و اعلٰی ہمارا نبی | دل کو اُن سے خدا جدا نہ کرے | مومن وہ ہے جو اُن کی عزّت پہ مَرے دل سے

امام احمد رضا خان بریلوی | حدائق بخشش