حصل الشفا بخیالہ - امیرمینائی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: امیر مینائی



بلغ العلی بکمالہ سعدی شیرازی کا شہرہءِآفاق کلام ہے ۔ اس پر برصغیر کے مشہور شاعر امیر مینائی نے بھی کچھ مصرعے لگائے ہیں ۔جو یہاں پیش کیے جا رہے ہیں ۔

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

حَصَل الشّفَا بِخَیَا لِہِ [1] انکے تصور سے شفا ہوگئی
وَ صَل الا سٰی بِوَصَالِہِ انکے وصل سے اداسی دور ہوگئی
عَذبت عیونُ مقالہِ انکی گفتگو کے چشمہ شیریں ہیں
عظُمت شؤونُ جَلالہِ انکے جاہ و جلال کی عظیم شان ہے
نصبت لَواءُ نَوَ الہِ انکی عطا کے جھنڈے گڑ گئے ہیں
حُمِدَت جَمیعُ خِصَالہِ انکی تمام صفات قابل تعریف ہیں
شَرَفَ الثّرَیٰ بِظِلَالِہ انکے سائے سے زمین کو عزت ملی
سَمَکَ السَّمَا بِنِعَالِہ انکی نعلین مبارک سے آسمانوں کو رفعت ملی
بلغ العلی بکمالہ [2] آپ اپنے کمال کی وجہ سے بلندیوں پر پہنچے
کشف الدجی بجمالہ اُنہوں نے اپنے جمال سے کی تاریکیوں کو دور کیا
حسنت جمیع خصالہ اُن کی تمام خصلتیں خوب ہیں
صلو ا علیہ و آلہ ان پر اور ان کی آل پر درود بھیجو

ترجمہ[ترمیم]

ڈاکٹر خورشید نسرین

حواشی و حوالہ جات[ترمیم]

  1. العمدہ الجزاء الاول، ص: 6 بحوالہ ڈاکٹر محمد اسحاق قریشی ، بر صغیر پاک و ہند میں عربی نعتیہ شاعری، مرکز معارف الاولیا، محکمہ اوقاف، حکومت پنجاب، دسمبر 2002، ص: 43
  2. شیخ سعدی کا مشہور قطعہ