جانے کب اوج پہ قسمت کا ستارا ہوگا ۔ یامین وارثی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: یامین وارثی

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

جانے کب اوج پہ قسمت کا ستارا ہوگا

سامنے آنکھ کے کب گنبدِ خضرا ہوگا


دیکھئے ملتا ہے کب اذنِ حضوری مجھ کو

جانے کب میرا سفرِ جانب بطحا ہوگا


جو بھی سرکار کے دامن سے ہوا وابستہ

وہ کبھی محفلِ دنیا میں نہ رسوا ہوگا


کب میں دیکھوں گا وہ روضے کی سنہری جالی

کب مقدّر میں مرے وقت سنہرا ہوگا


محفلِ نعت اسی طرح سجائے رکھئے

ایک دن سرورِ کونین کا پھیرا ہوگا


ہے یقیں وہ کبھی رحمت سے نہ ہوگا محروم

جس نے سرکارِ دو عالم کو پکارا ہوگا


نامِ سرکار ہے سرمایۂ دین ودنیا

زیرِ مدفن بھی یہی نام وظیفہ ہوگا


جب نقابِ رُخ روشن وہ اُٹھے گی یامین

بزمِ کونین میں ہر سمت اُجالا ہوگا