تاجدار زماں، مالک دو جہاں ، کب تیرے در پہ تیرا غلام آئیگا ۔ صائم چشتی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: صائم چشتی


نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

تاجدار زماں، مالک دو جہاں ، کب تیرے در پہ تیرا غلام آئیگا

کب میں دیکھوں گا کی ہریالیاں کب مدینے سے مجھ کو پیام آئیگا


سوچتا ہوں مدینے کو جب جاوں گا کیسے اداب سارے بجا لاوں گا

روک لوں گا میں سجدوں سے کیسے جبیں جب وہ کعبے سے بڑھ کر مقام آئیگا


مجھ کو معلوم ہے ہوگی اتنی خوشی، ختم ہو جائے گی یہ مری زندگی

میری مضطر نگاہوں کے جب سامنے روضہ پاک خیر الا نام آئیگا


عاشقو، ذکر ان کو سناتے رہو، یاد آقا میں روتے رلاتے رہو

بس یہی کام ہے وہ خدا کی قسم روز محشر تمہارے جو کام آئیگا


کس قدر ہوگی فرصت فزا وہ گھڑی ، کس قدر ہوگی راحت نما وہ گھڑی

زائرین مدینہ کی فہرست میں جب خطا کار صائم کا نام آئیگا


مزید دیکھیے[ترمیم]

اقبال عظیم | بیدم شاہ وارثی | حفیظ جالندھری | خالد محمود خالد | ریاض سہروردی | عبدالستار نیازی | کوثر بریلوی | نصیر الدین نصیر | منور بدایونی | مصطفیٰ رضا نوری | محمد علی ظہوری | محمد بخش مسلم | محمد الیاس قادری | صبیح رحمانی | قاسم جہانگیری | یوسف قدیری | قمر انجم | سید ناصر چشتی | صائم چشتی | وقار احمد صدیقی | شکیل بدایونی | ساغر صدیقی | حامد لکھنوی | حبیب پینٹر