اب تنگی داماں پہ نہ جا اور بھی کچھ مانگ ۔ نصیر الدین نصیر

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page; it is not the most recent. View the most recent revision.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر : نصیر الدین نصیر

نعت رسول اللہ صل اعلی علیہ و سلم

اب تنگی داماں پہ نہ جا اور بھی کچھ مانگ،

ہیں آج وہ مائل بہ عطا اور بھی کچھ مانگ.


ہیں وہ متوجہ' تو دعا اور بھی کچھ مانگ،

جو کچھ تجھے ملنا تھا ملا' اور بھی کچھ مانگ.


ہر چند کے مولا نے بھرا ہے تیرا کشکول

کم ظرف نہ بن ہاتھ بڑھا' اور بھی کچھ مانگ.


چھو کر ابھی آی ہے سر زلف محمدﷺ

کیا چاہیے اے باد صبا اور بھی کچھ مانگ.


یا سرور دیں' شاہ عرب' رحمت عالم

دے کر تہ دل سے یہ صدا اور بھی کچھ مانگ.


سرکارﷺ کا در ہے در شاہاں تو نہیں ہے

جو مانگ لیا مانگ لیا اور بھی کچھ مانگ.


جن لوگوں کو یہ شک ہے کرم ان کا ہے محدود

ان لوگوں کی باتوں پے نہ جا اور بھی کچھ مانگ.


اس در پے یہ انجام ہوا حسن طلب کا

جھولی میری بھر بھر کے کہا اور بھی کچھ مانگ.


سلطان مدینہ کی زیارت کی دعا کر

جنت کی طلب چیز ہے کیا اور بھی کچھ مانگ.


دے سکتے ہیں کیا کچھ کے وہ کچھ دے نہیں سکتے

یہ بحث نہ کر ہوش میں آ اور بھی کچھ مانگ


مانا کے اسی در سے غنی ہو کے اٹھا ہے

پھر بھی در سرکارﷺ پہ جا اور بھی کچھ مانگ.


پہنچا ہے جو اس در پے تو رہ رہ کے نصیر آج

آواز پہ آواز لگا اور بھی کچھ مانگ


نعت خوانوں میں کلام کی پذیرائی

| شہباز قمر فریدی کی آواز میں

مزید دیکھیے

نصیر الدین نصیر