آرزو کس کی کروں ان کی تمنا چھوڑ کر ۔ سید ریاض الدین سہروردی

"نعت کائنات" سے
This is the approved revision of this page, as well as being the most recent.
:چھلانگ بطرف رہنمائی, تلاش

"نعت کائنات " پر اپنے تعارفی صفحے ، شاعری، کتابیں اور رسالے آن لائن کروانے کے لیے رابطہ کریں ۔ سہیل شہزاد : 03327866659

شاعر: سید ریاض الدین سہروردی

نعتِ رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم[ترمیم]

آرزو کس کی کروں ان کی تمنا چھوڑ کر

کس کے در پر جا پڑوں در مصطفی کا چھوڑ کر


جب مدادائے غم عصیاں ہے ذکر مصطفی

کیوں کسی کا رخ کروں ایسا مسیحا چھوڑ کر


ان سے دور ہے اندھیرا قرب ان کا روشنی

جائیں کیوں تاریکیوں میں یہ اجلا چھوڑ کر


پا نہیں سکتا کوئی محشر کی گرمی کے دن

رحمت کو نین کے دامن کا سایہ چھوڑ کر


تشنہ لب سیراب ہو سکتے ہیں نہیں محشر کے دن

سرور کونین کی رحمت کا دریا چھوڑ کر


وہ ملے تو مل گئیں دونوں جہاں کی نعمتیں

ہم نہ جائیں گے کہیں بھی ان کا کوچہ چھوڑ کر


ہم جو مر جاتے مدینے تو ہوتے خوش نصیب

ہائے ہم کیوں آگئے یا رب مدینہ چھوڑ کر


کاش بر آئے الہی آرزوئے دل میری

ان سے وابستہ رہوں میں ساری دنیا چھوڑ کر


جب گوارا ان کو میرا دکھ نہیں اے ریاض

کیوں پکاروں پھر کسی کو ایسا آقا چھوڑ کر


مزید دیکھیے[ترمیم]

سید ریاض الدین سہروردی